بیلجیئم کے دارالحکومت برسلزمیں یکے بعد دیگرے 7 دھماکے

Brussels attacks

Brussels attacks

پیرس (رپورٹ زاہد مصطفی اعوان ) بیلجیئم کے دارالحکومت برسلز میں یکے بعد دیگرے 7 دھماکے ۔ 34 ھلاک 200 سے زائد زخمی۔تفصیل کے مطابق یورپین دارالحکومت برسلز دھماکوں سے گونج اٹھا ، ائیر پورٹ کے ڈیپارچر لاونج میں دو دھماکے ہوئے،دو دھماکوں کے بعد ائیر پورٹ پر بھگدڑ مچ گئی ۔اور لوگ خوف کے مارے ائیر پورٹ لاونج سے باہر نکلنے کے دوڑے۔ میٹرو اسٹیشن کے قریب چار دھماکے ہوئے۔ صدارتی محل کے قریب ساتویں دھماکے کے بعد شہر میں دھماکوں سے ہلاکتوں کی تعداد 34 ہو گئی۔آج کی صبح برسلز کے شہریوں کے لیے خوفناک تباہی لے کرآئی ، جب برسلز ائیر پورٹ زور دار دھماکوں سے گونج اٹھا۔ بیلجیئم کے دارالحکومت برسلزکے مرکزی ائیرپورٹ پرعینی شاہدین کے مطابق صبح آٹھ بجے پہلا دھماکا ہوا اور پھر فوراً ہی دوسرا دھماکا ہوگیا،جس کے نتیجے میں 17افراد ہلاک ہو گئے ۔اوردرجنوں افراد زخمی ہوئے۔ دھماکے کے بعد ائیر پورٹ پر موجود مسافراوردیگرافراد خوف زدہ ہوکر باہردوڑ پڑے۔دوسرادھماکہ برسلز ایئرپورٹ ڈیپارچرہال میں امریکن ائیرلائنزڈیسک کے قریب ہوا۔ عینی شاہدین کا کہنا کہ دھماکوں سے قبل فائرنگ بھی کی گئی اور ایک شخص عربی زبان میں افسودہ باہر کی طر ف دوڑ رہا تھا ۔

برسلز ایئرپورٹ سے مزید کئی بم اور تین خود کش بیلٹ بھی ملی ہیں ۔جبکہ ائیرپورٹ کو فوری طور پر سیل کر دیا گیا ۔ ائیر پورٹ پر دھماکوں کے بعد برسلز کا میٹرو اسٹیشن یکے بعد دیگرے چار دھماکے ہو گئے۔ ایئر پورٹ اور میٹر و اسٹیشنز پر 6 دھماکوں کے بعد صدارتی محل کے قریب ایک اور دھماکا ہوا۔ دھماکوں کے بعد برسلزایئرپورٹ کی عمارت خالی کراکے عارضی طورپربند کردی گئی۔ ایئرپورٹ جانے والی ٹرین سروس معطل اور تمام پبلک ٹرانسپورٹ بھی بند کردی گئی۔ دھماکوں کے بعد برسلزایئرپورٹ پرآنے والی تمام پروازوں کا رخ موڑدیا گیا۔برسلز دھماکے پیرس حملوں کے اہم ملزم صالح عبدالسلام کی گرفتاری کے چار روزبعد ہوئے ہیں۔ ائیرپورٹ اورمیٹرودھماکوں کے بعد بیلجیئم میں سیکورٹی ہائی الرٹ کردی گئی ہے۔ برسلز میں پاکستان کی سفیر نغمانہ ہاشمی نے کہا کہ برسلز میں ہونے والے دہشت گردوں کے حملوں کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے ۔انھوں نے کہا کہ کسی بھی پاکستانی کی ہلاکت یا زخمی ہونے کی اطلاح نہیں ہے ۔

سفارت خانہ برسلز نے پاکستانیوں کے لئے ہیلپ لائن بھی قائم کر دی گئی ہے ۔جس پر تمام پاکستانی اپنے عزیز و اقارب کی خبر لے سکتے ہیں ۔وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف اور صدر مملکت ممنون حسین کی طرف سے بھی برسلز حملوں کی شدید مذمت کی ہے ۔.برسلز میں دھماکوں کے بعد یورپ کے کئی ممالک میں سیکورٹی ہائی الرٹ کردی گئی ، جب کہ فرانس اور بیلجیئم کی سرحد کو بھی بند کردیا گیا ہے۔برسلز دھماکوں کے بعد بلیجیئم سمیت یورپ بھر میں خوف کے سائے لہرانے لگے۔بیلجئیم کی پارلیمنٹ اور وزیر اعظم آ فس کو خالی کرا لیاگیا،یورپی یونین کے تمام اجلاس منسوخ کر دئیے گئے۔برسلز میں یورپی یونین کی عمارت کے اطراف سیکیورٹی سخت کردی گئی۔ لندن،فرینکفرٹ،پیرس اور دیگر یورپی یونین ملکوں کے شہروں میں بھی دھماکوں کے بعد سیکیورٹی بڑھا دی گئی۔ ہالینڈ میں برسلز دھماکوں کے بعد ائیرپورٹ اور سرحدوں پر سیکورٹی الرٹ جاری کردیا گیا۔ فرانس اور بیلجیئم کی سرحد بھی بند کردی گئی۔ برسلز ائیرپورٹ کو چار بجے کھول دیا گیا ہے ۔