تم بھی رقص فرمائو

تم بھی رقص فرمائو

تم بھی رقص فرمائو خواہشوں کے مقتل میں آنسوئوں کی جھل تھل میں میں بھی رقص کرتا ہوں تم بھی رقص فرمائو وحشتوں سے ٹکرائو ریزہ ریزہ خوابوں کی کرچیاں اٹھائو نہ درد سو گئے ہیں جو ان کو اب جگائو نہ…

لمحہ موجود

لمحہ موجود

ہم مسافر ہیں ایسی انجان گزرگاہوں کے جِن پہ چلتے ہوئے وحشت کا گماں ہوتا ہے دم اکھڑتا ہے تو مرنے کا سماں ہوتا ہے آبلہ پا ہیں مگر لمحہء آرام نہیں اپنی قسمت میں کوئی بھی تو دروبام نہیں ہم کو…

قطعہ

قطعہ

تعلق توڑ دینا چاہتا ہے وہ مجھ کو چھوڑ دینا چاہتا ہے نجانے کِس لئے وہ داستاں کو غموں کا موڑ دینا چاہتا ہے ساحل منیر…

ہم کو رکھ اپنی امان میں، اے میرا خدا

ہم کو رکھ اپنی امان میں، اے میرا خدا

کہیں بم دھماکے کہیں زلزلے اے خدا کب رکیں گے یہ سلسلے کہیں عمل مکافات ہیں کہیں قدرتی آفات ہیں بشر پر آئی ہیں وہ سختیاں پناہ مانگتے آدم زاد ہیں انسانی جانوں کا ہے اتنا زیاں کہ کانپ اٹھے ہیں زمین…

لگتے ہیں زہر جلوہ انوار شہر کے

لگتے ہیں زہر جلوہ انوار شہر کے

پھر سے لہو لہان ہیں بازار شہر کے کس نے مٹا کے رکھ دیے آثار شہر کے دامن قبائے دختر جمہور چاک ہے ڈھونڈو کہیں تو صاحبِ دستار شہر کے خوشا ہمارے عہد کے تمغات امتیاز فاقہ کشی سے مر گئے فنکار…

مت پوچھ مسلمان کا حال

مت پوچھ مسلمان کا حال

مسجد کے لیے سر کٹانے کو تیار ہے لیکن مسجد میں سر جھکانے کو تیار نہیں نبی کریم کا نام سنتے ہی جھوم جاتے ہیں نبی کریم کا حکم سنتے ہی گھوم جاتے ہیں کہتے ہیں کہ میرے رگ رگ میں ہے…

محبت اک عبادت ہے

محبت اک عبادت ہے

محبت اک عبادت ہے عبادت میں تصنع سے خدا بھی روٹھ جاتا ہے نمائش اور دکھاوے سے تعلق ٹوٹ جاتا ہے محبت اور عبادت میں نمائش ہو نہیں سکتی محبت اک عبادت ہے عبادت کے لیے بہتر ہے تنہائی کا عالم ہو…

خود خدا محبت ہے

خود خدا محبت ہے

خود خدا محبت ہے گھر کے سونے آنگن میں رونقیں محبت سے دِل کی ویراں بستی میں راحتیں محبت سے بزمِ کیف و مستی کی شدتیں محبت سے تیرے میرے جذبوں کی حِدتیں محبت سے مامتا کے ہونٹوں پر اِک دعا محبت…

حرف اقرار تک نہیں پہنچے

حرف اقرار تک نہیں پہنچے

حرفِ اِقرار تک نہیں پہنچے تیرے معیار تک نہیں پہنچے ہم تہی دست شامِ ہِجراں میں تیرے دربار تک نہیں پہنچے میری قیمت لگانے والے سُن! جِنسِ بازار تک نہیں پہنچے لفظ مُردہ، خیال ناقص ہیں جو بھی اِنکار تک نہیں پہنچے…

بھلا دیا ہوتا

بھلا دیا ہوتا

غنیمِ شب نے اگر کچھ بچا دیا ہوتا فریب گاہِ سحر پہ لٹا دیا ہوتا تیری طرح سے اگر شوقِ رنگ و بو رکھتے تیری قسم تجھے دِل سے بھلا دیا ہوتا ساحل منیر…

تمھارے بعد

تمھارے بعد

تمھارے بعد کیا رکھتے کسی سے واسطہ تمھاری بے رخی نے ہمیں برف کر ڈالا دیکھو ہم نہ کہتے تھے وقت ظالم ہے بھلا دیا تمہیں بھی،وقت نے یہ اثر ڈالا واسطوں سے بھلا کب تعلق بنتے ہیں یہ احساس بھی دل…

محبت درمیانی راستہ ہے

محبت درمیانی راستہ ہے

یہی صبحِ ازل کا ضابطہ ہے اندھیرا ہی اندھیرے کی سزا ہے اسے کیوں قاسمِ بِینائی مانیں جِسے تقدیر نے اندھا کیا ہے گناہ و خیر کے حیرت کدے میں محبت درمیانی راستہ ہے چلے ہیں وقت کو تسخیر کرنے جِنہیں رُکنے…

میرے احساس کی صورت گری ہے

میرے احساس کی صورت گری ہے

میرے احساس کی صورت گری ہے محبت روح کی بالیدگی ہے تیرے ملبوس کی خوشبو مسلسل بدن کی شاخ سے لِپٹی ہوئی ہے تیری قربت کے جلتے موسموں میں میرے ہونٹوں پہ صبحوں کی نمی ہے تبسم آفریں آنکھوں میں ساحل طلسم…

نعمت سخن

نعمت سخن

رب کریم جس پہ انعام کرے محفل میلاد کا وہ اہتمام کرے رہے گی گھر اس کے سلامتی باہر سے جب آئے سلام کرے بھیجتے ہیں درود رب اور فرشتے وظیفہ یہی روزانہ صبح و شام کرے ملی ہے نعمت سخن وقلم…

سوال کے موسم

سوال کے موسم

شعور و فکر و نظر کے زوال کے موسم اتر رہے ہیں زمیں پر ملال کے موسم فقیہِ شہر تیرے عہدِ کم نگاہی میں! سلگ رہے ہیں لبوں پر سوال کے موسم ساحل منیر…

کچھ دیر ابھی

کچھ دیر ابھی

اپنی سولی کو اٹھاتے رہو کچھ دیر ابھی رسم الفت کی نِبھاتے رہو کچھ دیر ابھی غم کا حساس مٹانے کے لئے آج کی شب جام پہ جام پلاتے رہو کچھ دیر ابھی اِس محبت کی صداقت پہ کرے کون یقیں کوئی…

سالِ نو کی دعا

سالِ نو کی دعا

امن کی فاختہ رقص کرتی رہے مسکراہٹ لبوں پر مچلتی رہے اے خدا تیری رحمت کی بارش سدا ہر جگہ سالِ نو میں برستی رہے ساحل منیر…

ہم یاد کرتے رہے وہ یاد آتے رہے

ہم یاد کرتے رہے وہ یاد آتے رہے

ہم یاد کرتے رہے وہ یاد آتے رہے اس کشمکش مین دن رات گزرتے رہے نہیں آیا کوئی لوٹ کر وہاں سے J.D برسوں ہم جہاں اپنوں کو چھوڑ کر آتے رہے محمد جواد خان…

وہ یاد کیا آیا کہ جاگ اُٹھیں سب ہی خواہشیں

وہ یاد کیا آیا کہ جاگ اُٹھیں سب ہی خواہشیں

وہ یاد کیا آیا کہ جاگ اُٹھیں سب ہی خواہشیں J.D تازہ درد، گرم سانسیں، سرد ہوائیں اور دسمبر کی لمبی راتیں محمد جواد خان…

کیا گزری ہیں کیا بتائیں کیسے بتائیں

کیا گزری ہیں کیا بتائیں کیسے بتائیں

کیا گزری ہیں؟ کیا بتائیں؟ کیسے بتائیں؟ چلو اسکو بتائیں J.D آئو آج ہم دسمبر کو دسمبر میں دسمبر سے دسمبر کی طرح ملائیں محمد جواد خان…

سوچتا ہوں کہ نئے سال پہ کیا پیش کروں

سوچتا ہوں کہ نئے سال پہ کیا پیش کروں

سوچتا ہوں کہ نئے سال پہ کیا پیش کروں گزرے ایام کی تلخی یا سزا پیش کروں سوچتا ہوں کہ نئے سال پہ کیا پیش کروں سالہا سال زمانے میں گنہگار رہے ہر گھڑی درد و اذیت کے سزاوار رہے نسلِ انساں…

میری جان پاکستان

میری جان پاکستان

میرے وطن تیرے دیوار در سجانا ہے تیری عظمت تیری حرمت کو بھی بچانا ہے یے ترے لال و گوہر اور تیرے سر و سمن یے کوہسار یے برگ بار اے میرے ارض وطن انھے عدو کی بری نظروں سے بچانا ہے…

دھرنے کی سیاست ہے یا ہڑتال کا موسم

دھرنے کی سیاست ہے یا ہڑتال کا موسم

دھرنے کی سیاست ہے یا ہڑتال کا موسم آیا ہے بہت دھوم سے پھر پیار کا موسم رشوت ہے کرپشن ہے یا بھتے کی سیاست آیا ہے پھر سے بھائیوں ہڑتال کا موسم ڈنڈے بهی نکل آے ہیں جھنڈے بھی یہیں ہیں…

یبیاض دل

یبیاض دل

آج تو بات کسی بیوفا کی کرتے ہیں تمہاری بات نہی ھے یے. اک کہانی ھے جو تم کو آج ذرا بیٹھ کر سنانی ھے بہت پرانی کہانی ھے یاد ھے تم کو جب ایک بار .سرے راہ تم نے بولا تھا…