Quantcast

میں خیال ہوں کسی اور کا مجھے سوچتا کوئی اور ہے
تم نے سچ بولنے کی جرات کی
یہ لوگ جس سے اب انکار کرنا چاہتے ہیں
یہ اور بات کہ خود کو بہت تباہ کیا
کیا بتائیں فصلِ بے خوابی یہاں بوتا کون
وہ جو ہمرہی کا غرور تھا، وہ سوادِ راہ میں جل بجھا
کہیں تم قسمت کا لکھا تبدیل کر لیتے