بے رنگ بے محبت مگر کامیاب شادیاں

Successful Marriage

Successful Marriage

تحریر: ممتاز ملک پیرس
ایک کامیاب شادی کیا ہوتی ہے ؟ ایک کامیاب بیاہتا جوڑا کون سا ہوتا ہے ؟ ہم میں سے ننانوے فیصد لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ ہر وہ شادی ایک کامیاب شادی ہے جس میں زیادہ سے زیادہ عرصہ میاں بیوی نے ایک ہی گھر میں گزار لیا . یعنی دوسرے لفظوں میں جن کی طلاق نہیں ہوئی وہ بڑا خوشگوار اور کامیاب بیاہتا جوڑا ہے اور ان کی شادی بھی بڑی کامیاب شادی ہے .جبکہ حقیقت بلکل ہی عجیب ہے ایک تو یہ کہ ان کی اکثریت میں آپس میں پیار محبت نام کی کوئ چیز موجود د ہی نہیں ہوتی . تو پھر ایک جگہ کیوں رہتے ہیں ؟

کسی کے بقول اب بچے ہو گئے ہیں اس لیئے ، کسی کے بقول لوگ کیا کہیں گے، اب بچے بڑے ہو رہے ہیں ، خاندان میں دشمنی پڑ جائے گی، وغیرہ وغیرہ وغیرہ رہی بات طلاق کی تو نہیں لینی۔ لیکن کئی جگہ تو اس آپسی ناچاقی کا علاج ایک دوسرے سے بھرپور بےوفائی کر کے نکالا جاتا ہے .صاحب تو صاحب ان کی بی بی بھی کسی سے پیچھے نہیں رہتی ہیں . یعنی صاحب کے نام کا ٹیگ بھی لگا رہے اور محبت کی کمی کا رونا کہیں اور جا کر بھی نہ صرف رو لیا جائے بلکہ اس کی کمی کو پورا کرنے کا ہر اقدام بھی اٹھا لیا جائے۔

Muhabbat

Muhabbat

حالانکہ کوئی ذرا سی عقل اور شرافت رکھنے والا بھی یہ بخوبی سمجھ سکتا یے کہ ایک باقاعدہ بیوی یا شوہر کے ہوتے ہوئے محبت کا ناجائز کھیل کھیلا جائے تو یہ بیمار نفسیات کی علامت ہے . اس لیئے اگر وہ محبت کرنے والا اتنا ہی مخلص ہے تو طلاق لیکر اسے اپنا کیوں نہیں لیتا ؟ اور اگر وہ سچا نہیں ہے تو عورت یہ میٹھا زہر کیوں پھانک رہی ہے ؟ جبکہ اس کا انجام سو فیصد تباہی ہے.خاص طور پر جب اپنے شوہر کے سوا کسے کا خیال دل میں بس جائے اور اس کے ساتھ زندگی گزارنے کا خبط سوار ہو جائے تو حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی ایک حدیث کے معانی ہیں کہ اپنے شوہر سے طلاق لیکر اسی دوسرے آدمی سے شادی کر لو۔

ورنہ دوسری صورت میں تباہی صرف عورت کا ہی مقدر بنتی ہے دنیا میں بھی اور آخرت میں بھی۔ رہی بات یہ ثابت کرنے کی کہ جس کے جتنے زیادہ بچے ہیں ان کی آپس میں اتنی ہی زیادہ محبت ہے تو یہ ایک بہت ہی بڑی غلط فہمی ہے. بچے پیدا کر لینا اس بات کا قطعی ثبوت نہیں ہے کہ اس جوڑے کے بیچ محبت بھی یے . اس کا ثبوت کہ عورت کا ریپسٹ ایک بار کسی کو بربادکر کے اس کی جھولی میں بچہ ڈال جائے تو کیا وہ د ونوں ایک دوسرے کی محبت میں گرفتار تھے ؟ جبکہ دونوں میں ایک لٹنے والی تھی اور ایک لٹیرا تھا ? کسی بھی رشتے کو گھسیٹنے سے کہیں اچھا ہے کہ اس کو آر یا پار کر دیا جائے۔

Children

Children

رہی بات بچوں کی تو بچے باپ کے پاس رہنے چاہیئیں . کیونکہ سوتیلا باپ سوتیلی ماں سے کہیں زیادہ خوفناک کردار ہوتا ہے یا پھر ماں اس صوررت میں اپنے بچے اپنے پاس رکھے جب وہ مالی اور معاشرتی طور پر ایک مضبوط حیثیت رکھتی ہے . اگر باپ یہ مضبوط حیثیت رکھتا ہے تو وہ اپنے بچوں کو ان کی ماں کے ساتھ رہنے کی صورت میں بہترین نان نفقہ بخوشی ان کے تعلیمی اخراجات اور شادی بیاہ تک ادائیگی کرتا رہے تو بھی یہ بچے محفوظ ماحول میں پل سکتے ہیں۔

ان کی ماں کو دوسری شادی نہ کرنے کی بلیک میلنگ کسی طور پر نہیں کرنا چاہیئے . تاکہ وہ کسی گناہ میں مبتلا نہ ہو جائے . کیونکہ اس کا ایسا کرنا بھی آپ کے ہی بچوں پر اثرانداز ہو گا . اور بچوں نے اپنے اپنے راستے ہو لینا ہوتا ہے.جبکہ عورت ان سے لپٹ کر ساری عمر کی خواری اپنے نام کروا لیتی ہے۔

Mumtaz Malik

Mumtaz Malik

تحریر: ممتاز ملک پیرس