ڈاکٹر حبیب بٹ، ڈاکٹر طاہر لون، ڈاکٹر گل زمان بٹ اور سیاسی رہنما خواجہ زاہد لون کے ہمرہ خوشگوار موڈ میں

Group Photo

Group Photo

لیوٹن برطانیہ (تیمور لون) برطانیہ میں مقیم کشمیری کمیونٹی خصوصا کوٹلی آزاد کشمیر کے لوگوں کی محبت کا بے حد شکرگزار ہوں۔ اپنے لوگوں کی بے پناہ محبت اور خلوص نے مجھے سوچنے پر مجبور کر دیا ہے کہ مستقبل قریب میں برطانیہ میں رہائش کے بارے میں سوچوں اور یہیں رہ کر اپنی طبعی فرائض سرانجام دوں ان خیالات کا اظہار سعودی عرب میں طبعی خدمات سرانجام دینے والے کوٹلی کی ہر دل عزیز شخصیت ڈاکٹر حبیب بٹ نے اپنے انتہائی مختصر اور مصروف دورہ برطانیہ کے دوران نمائندہ اخبار سے گفتگو کے دوران کیا۔

تفصیلات کے مطابق کوٹلی آزاد کشمیر کی ممتاز اور جانی مانی شخصیت ڈاکٹر حبیب بٹ ان دنوں برطانیہ کے مختصر دورہ برطانیہ پر ہیں انہوں نے کہا کہ برطانیہ میں وہ پہلے بھی آتے رہے ہیں لیکن اب کی بار تو لیوٹن میں ہر چار قدم پر کوئی نہ کوئی اپنا مل جاتا ہے اور جو بھی ملا گرم جوشی سے ملا ابھی برطانیہ آنے سے پہلے میں کوٹلی کا بھی چکر لگا چکا ہوں اور مرا خیال ہے کہ بری پارک میں جتنے اپنے لوگ ملے اتنے تو کوٹلی میں نہیں ملے کوٹلی میں تو تقریبا کاروبار پنجاب کے لوگوں نے سنبھال لیا ہے ہم سن رکھا ہے کہ پہلے لوگ کراچی یا دبئی جایا کرتے تھے لیکن اب کوٹلی آتے ہیں اور کوٹلی ہی ان کے لئے دبئی بن چکا ہے۔

برطانیہ کے نامور اور ایوارڈ یافتہ ڈاکٹر طاہر محمود لون ، ڈاکٹر محمود شاہ ، ڈاکٹر گل زمان بٹ ، ڈاکٹر ندیم راٹھور و برطانیہ میں ان کے فیملی ممبران بڑی تعداد میں مقیم ہیں جو انہیں برطانیہ مستقل قیام کا مشورہ دے چکے ہیں اور وہ خود بھی یہ سوچ رہے ہیں کہ وہ برطانیہ آ کر ڈینٹل سرجن کے فرائض سر انجام دیں جس کے لئے انہوں نے کچھ معلومات بھی حاصل کیں ۔ ڈاکٹر حبیب بٹ لیوٹن میں ڈاکٹر گل زمان بٹ کی رہائشگاہ پر ٹھہرے ہوئے ہیں اور کل سعودی عرب کے لئے واپس روانہ ہو جائنگے۔