یورپ میں مہاجرین و پناہ گزین فلاحی اداروں اور مخیر حضرات کے تعاون کے انتظار میں

Binat ul Muslimeen Global Birmingham

Binat ul Muslimeen Global Birmingham

برمنگھم (ایس ایم عرفان طاہر سے) یورپ میں مہاجرین و پناہ گزین فلاحی اداروں اور مخیر حضرات کے تعاون کے انتظار میں، گندگی کے ڈھیرگدلے پانی غلاظت صفائی ستھرائی کا مناسب انتظام نہ ہو نے کے باعث بچوں میں شدیدبیماریاں پھیلنے کا خدشہ، سربراہ بنا ت المسلمین برطانیہ مسز سمیرا فرخ کا چیئرمین ووڈ لینڈ مسجد ارشد محمود، ملک سبحان شفیق، کونسلر محمد اخلاق، کونسلر حبیب الرحمن اور دیگر کے ہمراہ فرانس مہا جر کیمپوں کا دورہ تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز بنات المسلمین برطانیہ کا فرانس میں موجود ڈنکرک اور کیلیس مہاجر بستیوں کا تفصیلی دورہ اس موقع پر بنا ت المسلمین برطانیہ کی سربراہ مسز سمیرا فرخ کے ہمراہ چیئرپرسن بنات المسلمین برطانیہ انیلہ اسد، کونسلر محمد اخلا ق، کونسلر حبیب الرحمن، کونسلر ماجد محمود، ملک سبحان شفیق، چیئرمین پاکستان اینڈر کشمیر ایسوسی ایشن ملٹن کین، چیئرمین ووڈ لینڈ مسجد ارشد محمود، رب نواز چغتائی اور دیگر بھی موجود تھے۔

جنہوں نے مہا جرین کی خیمہ بستیوں کا دوسری مرتبہ تفصیلی دورہ کرتے ہو ئے مہا جرین کے لیے ضروریا ت زندگی کی بنیا دی سہولیا ت کھا نے پینے کی اشیا ء اور دیگر سامان فراہم کیا ۔ دنیا بھر سے تصادم ذدہ علاقوں سے امن اور زندگی کی تلا ش میں یو رپ کی طرف ہجرت کرنے والے مہاجرین میں تیزی سے اضا فہ ہو رہا ہے۔ جن کی حالات زندگی خاصی دشوار گزار اور مسائل کا شکا ر دکھائی دے رہی ہے۔

بالعموم یورپ اور با الخصوص فرانس میں موجود مہا جرین کی خیمہ بستیوں میں سیکڑوں مہا جرخاندان زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلاء ہیں جنہیں موسم کی شدت اور خرابی کے باوجود اپنے معصوم چھوٹے چھوٹے بچوں اور خواتین کے ہمراہ انتہائی نامساعد حالا ت میں وقت گزارنا پڑ رہا ہے ۔ مہا جر بستیوں میں رہنے والے ان لوگوں کے لیے کھا نے پینے کا مناسب انتظام موجود ہے نہ ہی علاج معالجہ کی بہتر سہولیات جس کے با عث یہ لوگ کسی مسیحا اور درد دل رکھنے والے کی تلا ش میں بھولے بھٹکے روز ہی مصائب و مشکلا ت کاسامنا کرتے ہو ئے دکھائی دیتے ہیں۔

برطانیہ کے تمام شہروں اور دیہا توں سے مخیر حضرات ضروریا ت زندگی کی مختلف اشیاء لیکر یہاں ان مصائب و الم کا شکار افراد کے لیے خدما ت مہیا کررہے ہیں لیکن ہفتوں بعد پہنچنے والی ان اشیاء سے مہاجرین کی اس کثیر تعداد کو کوئی فائدہ نہیں پہنچایا جا سکتا ہے بلکہ روزانہ کی بنیا د پر انہیں ضروریا ت زندگی کی اشیاء اور امید کی ایک کرن کی تمنا رہتی ہے اس موقع پر سربراہ بنا ت المسلمین برطانیہ مسز سمیرا فرخ کا کہنا تھا کہ مہا جر بستیوں میں رہنے والے یہ افراد انسانی ہمدردی کے باعث زیادہ توجہ اور تعاون کے مستحق ہیں۔

ان مہا جرین کی زندگی کا ایک ایک لمحہ مشکلا ت اور مسائل کے باعث ایک ایک سال جتنا طویل دکھائی دیتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ صاحب اسطاعت اور مخیر حضرات کو چاہیے کہ ان لوگوں کے درد کا مداوا کرنے کے لیے دل کھول کر عطیات اور صدقہ و خیرات دیں تاکہ ان مسلمان بھائیو ں اور بہنوں کی زندگی کو خوشحالی و خوشگواری میں بدلا جا سکے۔

انہوں نے کہاکہ انسانی حقوق کے علمبردار تمام اداروں اور تنظیموں کو چاہیے کہ مہا جرین کی ان خیمہ بستیوں میں آباد بچوں اور بچیوں کو نہ صرف تعلیم اور صحت کی بنیا دی سہولیا ت فراہم کی جائیں بلکہ ان کو درپیش مسائل کا بھی فوری ازالہ ہونا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ یورپین یونین اور برطانوی حکومت اگر اپنا کردار ادا کرنا چاہیں تو مہا جر بستیوں میں آباد ان بے بسی مجبو ری و محرومی کا شکار انسانوں کو بھی اچھی زندگی بسر کرنے کے لیے تمام تر سہولیا ت میسر آسکتی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھوک افلاس اور پریشانی کا شکار یہ افراد انسانیت کے ناطے عدل و انصاف کے طلبگار ہیں۔ تمام مذہبی اور دیگر تفریقوں سے بالاتر ہو کر ان مہاجرین کے لیے خدمات وقت کی ضرورت بھی ہے اور نسانی حقوق کا تقاضا بھی۔