یورپی پارلیمنٹ میں کشمیر ای یو ویک میں شرکت کے لیے وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر بیلجیم پہنچ گئے

Raja Farooq Haider Welcome in Belgium

Raja Farooq Haider Welcome in Belgium

برسلز (پ۔ر) یورپی پارلیمنٹ میں کشمیرای یو ویک کی تقریبات میں شرکت کے لئے وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فارو ق حیدر خان کشمیر کونسل یورپ (ای یو) کی دعوت پر پیر کے روز بلجیم کے دارالحکومت برسلز پہنچ گئے ہیں۔ برسلز ائر پورٹ پر ان کا استقبال چیئرمین کشمیر کونسل ای یو علی رضا سید کی قیادت میں ایک وفد نے کیا۔ وزیراعظم کا استقبال کرنے والوں میں کشمیر کونسل ای یو کے سینئر رہنماء سردار صدیق، دیگر شخصیات چوہدری جہانگیر، مرزا شبیر، مرزامقصود، سید زاہد شاہ کاظمی، میجر (ر) زاہد، جبار خان، راجہ خالد اور راجہ جاوید شامل تھے۔

وزیراعظم فاروق حیدر کے ہمراہ ان کی کابینہ کے سینئر وزیر چوہدری طارق فاروق، ایم ایل اے برائے اوورسیز راجہ جاوید اقبال بھی بلجیم آئے ہیں۔ برسلز پہنچنے پر وزیراعظم آزاد کشمیر نے بتایا کہ یورپی یونین دنیا کا ایک موثر پلیٹ فارم ہے اور وہ مسئلہ کشمیر کو اس فورم پر بھرپور انداز میں اٹھائیں گے۔ بھارت نے چارماہ کے دوران کشمیریوں پر مظالم کی انتہاکردی ہے اور ہمارا فرض بنتاہے کہ عالمی سطح پراپنی آواز بلند کریں۔

۔وزیراعظم کشمیرای یو۔ویک کی سالانہ تقریبات میں مہمان خصوصی کی حیثیت سے شرکت کررہے ہیں ۔کشمیرای یو ۔ویک یا ’’یورپ میں ہفتہ کشمیر‘‘ جس میں بین الاقوامی کانفرنس، متعددسیمینارز، مباحثے، ورکشاپس ، کشمیرپردستاویزی فلم اور عکاسی اور دست کاری کی اشیاء کی نمائش شامل ہے، یورپی پارلیمنٹ میں جمعہ گیارہ نومبر تک جاری رہے گا۔ ہفتہ کشمیرکے دوران مقبوضہ کشمیرکی تازہ ترین صورتحال پر ایک رپورٹ بھی پیش کی جارہی ہے جس میں گذشتہ چار ماہ سے کشمیریوں پر بھارتی مظالم کے بارے میں حقائق شامل ہیں۔

کشمیرای یو ۔ویک کی تقریبات میں شرکت کے لیے آزادکشمیراورمقبوضہ کشمیرکے علاوہ شمالی امریکہ، برطانیہ اور یورپ کے دیگر ممالک سے بھی مندوبین پہلے ہی برسلزپہنچ گئے ہیں۔ تقریبات کے افتتاحی پروگرام میں اراکین پارلیمنٹ، سیاسی اورسماجی شخصیات، دانشوروں اورمعاشرے دوسرے طبقات سے تعلق رکھنے والے اہم افراد کو مدعوکیاگیاتھا۔

کشمیرکونسل ای یو کی طرف سے کشمیرای یو ۔ویک کی سالانہ تقریبات کا سلسلہ گذشتہ سات آٹھ سالوں سے جاری ہے۔اس کے علاوہ بھی کشمیرکونسل ای یو کی طرف سے دیگر مواقع پر بھی مسئلہ کشمیرپر تقریبات منعقد کی جاتی ہیں۔کشمیرکونسل ای یو کے زیراہتمام وقتاًفوقتاً یورپ کے قانون ساز، تحقیقی اورعلمی اداروں میں اجلاسوں، کانفرنسوں ، مباحثوں اورسیمیناروں کا انعقادکیاجاتاہے ۔ مختلف یورپی ممالک میں کونسل کی طرف سے کشمیرپر ایک ملین دستخطی مہم بھی جاری ہے۔

ان پروگراموں اورتقریبات کی وجہ سے یورپ کی سطح پر مسئلہ کشمیر کے حوالے سے قابل توجہ آگاہی پیداہوگئی ہے۔ان تقریبات کے انعقادکے سلسلے میں کشمیرکونسل ای یو کے ساتھ یورپ کی دیگرکشمیری تنظیمیں بھی تعاون کررہی ہیں۔کشمیرکونسل ای یو کے چیئرمین علی رضاسید نے بتایاکہ ان تقریبات کا مقصد مقبوضہ کشمیرمیں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کو اجاگرکرناہے اور مسئلہ کشمیرکے حوالے سے آگاہی پیداکرناہے۔

علی رضا سید نے بتایاکہ اس دفعہ کشمیرکونسل ایو۔ویک کی تقریبات زیادہ اہم ہیں کیونکہ اس باربھارتی فوجیوں نے مقبوضہ کشمیرمیں مظالم کی انتہاکردی ہے۔ نہتے مظاہرین پر پیلٹ گن کے حملوں میں بڑی تعداد میں لوگ نابینااور ہزاروں زخمی ہوچکے ہیں۔گذشتہ چار ماہ کے دوران ایک سو سے زائد شہید ہوچکے ہیں۔