حضرت سلطان العارفین کا تصور اسم ذات انسانی معراج کا خاصا ہے، حق باہو سیمینار

Pir Fiaz ul Hassan Qadri

Pir Fiaz ul Hassan Qadri

برمنگھم (ایس ایم عرفان طاہر سے) حضرت سلطان العارفین سخی سلطان باہو کا تصور اسم ذات انسانی معراج کا خاصا ہے ،رسول خدا ۖسے محبت اور انکی حقیقی پیروی کے بغیر بخشش و مغفرت اور قدر و منزلت کاحصول ناممکن ہے رسول اللہ ۖ سے محبت درحقیقت اللہ سے محبت کی دلیل ہے۔ ،اولیاء کرام اور مشائخ عظام کی مقدس زندگیوں سے اللہ اور اسکے رسول ۖ سے محبت اور فکر آخرت کا نمایاں درس ملتا ہے، ہر نیکی کی بنیا د تصور پر ہوتی ہے اگر انسان اپنے قلوب و اذہان کو مثبت پہلو کی طرف گامزن کرلے تو بے راہ روی اور گمراہی سے ہمیشہ ہمیشہ کے لیے محفوظ ہو جاتا ہے ، اللہ تعالیٰ کے نام کا تصور کرکے اور اسے دیکھنے سے آنکھوں کے اندر ایک طہارت پیدا ہوتی ہے اور اللہ کے نام کا نقش انسانی دل پر نقش ہوجاتا ہے۔

ان خیالات کا اظہار مقررین نے باہو سنٹر میں پہلے حق باہو سیمینار کے شرکاء سے خطابات کرتے ہوئے کیا۔ سیمینار کی صدارت سجادہ نشین دربار عالیہ حضرت سخی سلطان باہو پیر سلطان فیاض الحسن قادری سروری نے کی جبکہ بطور مہمان خصوصی چیئرمین حضرت سلطان با ہو ٹرسٹ برطانیہ پیر سلطان نیاز الحسن قادری سروری بھی موجود تھے۔ اس موقع پر پیر سید لخت حسنین شاہ چیئرمین مسلم ہینڈز برطانیہ ، علامہ سید ظفر اللہ شاہ ، علامہ سید فاروق شاہ ، مولانا غفور احمد چشتی ، پر وفیسر مسعود اختر ہزاروی اور منصور آفا ق نے حضرت سخی سلطان با ہو کے حوالہ سے مقالہ جات پیش کیے۔

قاری علی محمد قادری ، قاری طارق محمود قادری ، قاری ظہور احمد سیفی ، صوفی نذیر احمد نقشبندی ، حافظ بلال نوشاہی سہروردی ، حافظ قاسم صدیق چشتی، حافظ حمزہ قمر نے کلام باہو پیش کیا ۔ اس موقع پر مقصود علی شاہ ، حاجی منیر عاصم ، صاحبزادہ سعید الر شید عباسی ، مولانا سلیم نقشبندی، مسز طلعت سلیم، بیرسٹر رشید مرزا، محمد ایوب ، چو ہدری اسلم وسن ، راجہ ایاز خان، لالہ عبد القدیر احمد قادراور دیگر نے خصوصی شرکت کی ۔ پیر سلطان فیا ض الحسن قادری سروری نے کہاکہ امر با لمعروف و نہی عن المنکر کا کردار معاشرے کی تطہیر کے لیے بے حد ضروری ہے۔

انہوں نے کہاکہ ہما رے معاشرے میں ہمہ وقت کوئی نہ کوئی ایسی جما عت ضرور ہونی چا ہیے جو نیکی کی تلقین کرے اور برائی سے روکتی رہے ۔ علامہ سید ظفر اللہ شاہ نے کاکہاکہ آج کے پر فتن دور میں جہاں مزارات کو گرایا جا رہا ہے اور قبر کی بے حرمتی کے واقعات رونما ہو رہے ہیں اس وقت اسلاف کی تعلیمات سے استفادہ کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہو ں نے کہاکہ اسلام اور ہما رے اسلاف انتہا پسندی اور دہشتگردی کو کہیں بھی پسند نہیں فرما تے ہیں ۔ پیر سید لخت حسنین نے کہاکہ جو انسان کسی مرشد یا روحانی شخصیت کے ساتھ وابستہ نہ ہو تو وہ دنیا کے میلے میں گم ہو کر رہ جاتا ہے۔ پر و فیسر مسعود اختر ہزاروی نے کہاکہ من کی سچائی اور طہا رت کے بغیر نیکی پر عمل ممکن نہیں ہے۔ علامہ سید فاروق شاہ نے کہاکہ صحابہ کرام اور اہلبیت اطہا ر کی زندگیا ں ہما رے لیے مشعل راہ ہیں کسی ایک کی پیروی سے جنت کا سفر آسان ہوجا تا ہے۔