عزت و احترام کا دامن ہاتھ سے نا چھوڑیں! ورنہ سفر لمبا اور کٹھن ھو جائے گا۔ راؤ خلیل احمد

Rao Khalil

Rao Khalil

پیرس (راؤ خلیل احمد) کل ایک صحافی کے سوال کے جواب میں چیرمن پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے رائے ونڈ مارچ پر کہا کہ میں رشتہ تو لینے نہیں جا رہا۔ جس پر عمران خان اور ڈاکٹر قادری مخالفین نے ایشو بنا لیا اس سے ان دونوں کے بھولے سپوٹر متاثر ہوئے بغیر نہ رہ سکے۔

یہ سچ ھے کہ جب انسان کسی سے رشتہ داری کرنے جاتا ھے تو اپنے رشتہ داروں کا ساتھ ھونا ضروری ھوتا ھے۔ عمران خان کا کہنا درست ھے کہ وہ نواز شریف سے رشتہ لینے نھیں جا رہے بلکہ کرپشن کا حساب لینے جا رھے ہیں۔ ایسے میں دعوت سب کو ہے۔ کرپشن کا حساب رائے ونڈ میں لینا ٹھیک فیصلہ ہے یا نہیں ! وقت بتا دے گا۔

پاکستان تحریک انصاف کے قائد کا فیصلہ ہے کارکنان تحریک انصاف کو بھر پور کردار ادا کرنا ھوگا پاکستان عوامی تحریک کے قائد ڈاکٹر قادری کے مطابق یہ فیصلہ سود مند نہیں سوائے کارکنوں کو تھکانے کے اور ایسا سوچنا ان کا حق ھے۔

یہ بات سب کو سمجھ لینی چاہیے کہ ناتو پاکستان عوامی تحریک، پاکستان تحریک انصاف کی بی ٹیم ھے اور نا ہی پاکستان تحریک انصاف ہی، پاکستان عوامی تحریک کی بی ٹیم ھے۔ دونوں تحریکیں ملک کی بقا اور استحکام پاکستان کی تحریکیں رہیں۔ سربراہان تحریک بہتر جانتے ہیں کہ کب کیا کرنا ھے۔

کارکنان کا فرض ھے کہ آپس میں اولجھنے کی بجائے کام پر نظر رکھیں۔ سب جانتے ہیں کہ یہ بات اب محاورہ بن چکی ھے کہ ” ڈاکٹر قادری ٹھیک کہتے تھے”۔

پاکستان میں تبدیلی کے خواہشمند حضرات سے درخواست ھے کہ حصول مقصد میں بہت ساری شاہراہوں پر سفر ایک ساتھ ھوگا۔ ساتھ چلتے اور جدا ھوتے عزت و احترام کا دامن ہاتھ سے نا چھوڑیں ! ورنہ سفر لمبا اور کٹھن ھو جائے گا۔