لینڈ ایکوزیشن ایکٹ کے خلاف دائر درخواست پر حکومت سے جواب طلب

Lahore High Court

Lahore High Court

لاہور (جیوڈیسک) ہائیکورٹ نے اورنج لائن ٹرین منصوبے کے نام پر شہریوں سے زمین کے حصول اور لینڈ ایکوزیشن ایکٹ کے خلاف دائر درخواست پر حکومت پنجاب سے جواب طلب کر لیا۔

لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس عابد عزیز شیخ کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی۔

درخواست گزاروں سیمی عارف نے عدالت کو بتایا کہ حکومت پنجاب نے قوانین کے برعکس شہریوں سے زمین حاصل کئے بغیر منصوبہ شروع کر دیا اور اب زبردستی ان سے زمینیں خالی کرائی جا رہی ہیں جو کہ آئین کے تحت بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ آئین پاکستان کے تحت جائیداد رکھنا ہر شہری کا بنیادی حق ہے جسے حکومت اورنج لائن ٹرین منصوبے کے نام پر سلب کرنا چاہتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ لینڈ ایکوزیشن ایکٹ 1894 کو آئین سے متصادم قرار دیتے ہوئے کالعدم قرار دیا جائے جس پر عدالت نے حکومت پنجاب کو نوٹس جاری کرتے ہوئے سات دسمبر کو جواب طلب کر لیا۔