بعض اخباری مضامین کے باعث روپے کو سٹے بازی کا سامنا ہے: سٹیٹ بینک

State Bank

State Bank

کراچی (جیوڈیسک) مرکزی بینک نے تمام خدشات کو رد کرتے ہوئے کہا ہے کہ غیر ملکی ادائیگیوں کی صورتحال متواتر بہتر ہو رہی ہے۔ روپے کے استحکام کے لیے مرکزی بینک ہر ممکن اقدامات لینے کے لیے تیار ہے۔ اسٹیٹ بینک کا کہنا ہے کہ بعض اخبارات میں شائع ہونے والے ایسے مضامین جن میں مجموعی اقتصادی استحکام کو پیش نظر نہیں رکھا گیا، ان مضامین کے باعث روپے کو سٹے بازی کا سامنا ہے۔

اسٹیٹ بینک کا کہنا ہے کہ شرح مبادلہ یا روپے کی قدر بڑی حد تک ملک کی اقتصادی صورتحال کے مطابق ہے، ایک طرف تو اسٹیٹ بینک کے زرمبادلہ کے ذخائر 15 ارب ڈالر سے تجاوز کر گئے ہیں تو دوسری جانب 5 سالوں میں بیرونی قرضے مجموعی پیداوار کے 33 فیصد سے گھٹ کر 23 فیصد رہ گئے ہیں۔

مرکزی بینک نے مضمون نگاروں پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اداریوں میں عالمی ریٹنگ ایجنسی کی جانب سے اجاگر کیے گئے معیشت کے مثبت پہلوؤں کو نظر انداز کیا گیا۔ موڈیز ریٹنگ ایجنسی نے معاشی اصلاحاتی عمل کو سراہا ہے۔