پاکستان میں ایجنٹ مافیا کے ذریعے انسانی سمگلنگ کی روک تھام

 Human Trafficking

Human Trafficking

پیرس (زاہد مصطفی اعوان) پاکستان میں ایجنٹ مافیا کے ذریعے انسانی سمگلنگ کی روک تھام۔ یورپی یونین کے کمیشن برائے مائیگریشن ہوم افیئر اینڈ سٹیزن کے وزیر متیرس اور اموپالوس غیر قانونی تارکین وطن کی واپسی اور مزید افراد کی آمد کو روکنے سے متعلق پالیسی پر تبادلہ خیال کی غرض سے پاکستان روانہ ہوگئے ہیں۔

متیرس اور اموپالوس نے رواں ماہ کے آغاز پر کہا تھا کہ پاکستان سمیت ایشیائی ممالک سے تعلق رکھنے والے افراد کچرے سے اٹھا کر کھانا کھالیں مگر غیر قانونی طور پر یورپ کا رخ نہ کریں۔بلکہ یورپ کے حالات بھی اب نئے تارکین وطن کے لئے ساز گار نہیں ہیں ۔ انہوں نے اپنے بیان میں یہ بھی کہا تھا کہ یورپی ممالک غیرقانونی طور پر مقیم پاکستانی شہریوں کو جہاز بھرکر پاکستان بھجوانے کی تیاریوں میں ہیں۔

اس بیان کے ردعمل میں پاکستان کے وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے ڈی پورٹ افراد سے متعلق یورپی ممالک سے کیا گیا معاہدہ معطل کر نے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہم پاکستانی ہونے کی مکمل تصدیق کے بغیر کسی فرد کو اترنے نہیں دیں گے۔

ادھر یورپین ممالک کے کاغذات رکھنے والوں پر فرانس واپسی پر پابندی مذید سخت کر دی گئی ہے ۔سپین اٹلی پرتگال بیلجیئم ہالینڈ اور دوسرے یورپین ممالک کے افراد کو پاکستان سے فرانس جانے پر مکمل پابندی لگائی ہوئی ہے ۔جبکہ وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خاں سے یورپین ممالک کے تارکین نے مطالبہ کیا ہے کہ حکومت فرانس کے اعلی حکام سے یورپین ممالک کے افراد کی واپسی کو ممکن بنانے کے لئے سفارتی کوششیں کی جائیں۔