پاکستان نیٹو سے بڑھ کر دنیا میں امن قائم کرنے کے لئے کوششیں کر رہا ہے۔ سینیٹر جنرل(ر) عبدالقیوم

Addressing Pakistani Community in Paris

Addressing Pakistani Community in Paris

پیرس (میاں عرفان صدیق) پاکستان نیٹو سے بڑھ کر دنیا میں امن قائم کرنے کے لئے کوششیں کر رہا ہے ۔ دنیا کو ہماری قربانیاں تسلیم کرنی ہوں گی۔ پاکستان دہشت گردی کے خلاف جنگ کے نتیجے میں ساٹھ ہزار سے زائد جانیں قربان کر چکاہے۔ ضرب عضب سے نہ صرف پاکستان بلکہ پورے خطےمیں امن قائم ہو رہا ہے۔ پاک چین کوریڈور پورے ملک کی ترقی میں اہم کردار ادا کرئے گا بین اقوامی سازشوں پر کان نہیں دہرنے چاہیں۔

ان خیالات کا اظہار چیرمین سینٹ کمیٹی برائے دفاعی پیداوار سینیٹر جنرل(ر) عبدالقیوم نے پیرس میں پاکستانی کمیونٹی سے خطاب کے دوران کیا جس کا انعقاد راجہ علی اصغر ،ملک عابد اور راحیل بٹ نے کیا۔اس موقع پرچوہدری حاجی محمد اعظم، میاں زوالفقار احمد جتالہ، چوہدری ممتاز پکھوال، منور جٹ،گلزار احمد لنگڑیال ،ابرار کیانی ،سید ظریف ،چوہدری آصف،چوہدری جاوید ،میاں ساجد، چوہدری آفاق،حاجی اشفاق، چوہدری آفتاب آف بھاو،چوہدری آصف عرباسپوری ،راجہ حمید ،راجہ چنگیز ،چوہدری غفور،حاجی اسلم،ملک افضال، چوہدری افراسیاب، میاں طارق، چوہدری مختاربشارت ،ملک ناصر محمود سرگودھا،چوہدری صفدر برنالی،چوہدری سجاد ڈوگہ،راؤ طاہر،چوہدری اقبال خونن، چوہدری اسد،چوہدری اشفاق، حاجی نثار،حاجی آفتاب کے علاوہ بڑی تعداد میں سیاسی و سماجی شخصیات سفارت خانہ پاکستان سے اعلٰی افسران جانباز خان، طاہر خوشنود، عمر، اور صحافیوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔

جنرل (ر)عبدالقیوم نے کہا کہ پاکستان آج جن خطروں اور شازشوں میں گھرا ہے ہم پر یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ ہم اتحاد اور یکجہتی کا مظاہرہ کریں اور دشمن کے سامنے ایک ڈھال بن کر کھڑے ہو جائیں۔ ہمارے ملک کو اس وقت خطے میں ایک خاص اہمیت حاصل ہوچکی ہے کیونکہ جہاں سے امریکہ جیسی سپر پاور اگر جنگ ہاری نہیں تو جیت بھی نہیں سکی وہاں امن قائم کرنے کے لئے پاکستان اپنا اہم کردار ادا کر رہا ہے اور دنیا کی ابھرتی ہوئی معاشی سپر پاور چین کو دنیا کی منڈیوں تک رسائی حاصل کرنے کے لئے پاکستان کوریڈور کی ضرورت پڑی۔ جس سے چین کیلئےچھبس ہزار کلومیٹر کا فاصلہ کم ہو کر صرف تین ہزار کلومیٹر رہ جائے گااور آنے والا وقت اس کا ہو گا جو معاشی طور پر مظبوط ہو گا۔کیونکہ یہ بات امریکہ کو بھی محسوس ہو چکی ہے کہ دنیا پر حکمرانی کرنے کے لئے صرف طاقت کا استعمال ہی کافی نہیں۔

آج پاکستان میں دس کروڑ سے ذائد ایسے نوجوان موجود ہیں جن کی عمر تیس سال سے کم ہے اور یہی نوجوان پاکستان کے لئے بڑے سرمائے کی حیثیت رکھتے ہیں اور انہی کی بدولت آج بین الاقوامی نشریاتی ادارے یہ کہنے پر مجبور ہیں کہ آنے والے چندسالوں میں پاکستان ایک بہترین مملکت کی صورت میں دنیا کے نقشے پر ابھرے گا۔جنرل (ر) عبدالقیوم نے مزید کہا کہ پاکستان نے ہمیں عزت ،شہرت،وقار ،دولت،نام الغرض سب کچھ دیا اور آج وقت ہے کہ ہم دنیا میں پاکستان کا نام روشن کریں اور ہمیں سب کو بتا دینا چاہیے کہ پاکستان خوبصورتی میں بھی اسپین،سوئٹزرلینڈ اور کسی بھی یورپی ملک سے کم نہیں۔

دنیا کی پہلی دس بلند ترین چوٹیوں میں سے آٹھ پاکستان میں موجود ہیں اور دنیا کی خوبصورت ترین جھیلیں بھی پاکستان میں موجود ہے ضرورت صرف اس امر کی ہے کہ ہم پاکستانی دنیا کے سامنے اپنا اچھا امیج پیش کریں اور جہاں بھی رہیں سلوک اتفاق اور یکجہتی سے رہیں تاکہ دنیا تک یہ پیغام پہنچ سکے کہ ہم امن پسند اور محبت کرنے والی قوم ہیں۔ قبل ازیں جنرل (ر) عبدالقیوم میں پیرس میں موجود پاکستانی سفارتخانے کا دورہ بھی کیا اور سفیر غالب اقبال اور دیگر عملے سے ملاقات کی ۔سفیر غالب اقبال نے انہیں پاکستان متعلق پیرس میں ہونے والی سرگرمیوں سے آگاہ کیا جس پر انہوں نے خوشی اور اطمینان کا اظہار کیا۔