کتلان پولیس نے ٹیکسی ڈرائیور کو کوکین بیچتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا

Arrest

Arrest

پیرس (زاہد مصطفی اعوان) کتلان پولیس نے اتوار کی رات کو بارسلونا کے ایک ٹیکسی ڈرائیور کو ٹیکسی میں ہی کوکین بیچتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا۔ کتلان پولیس کے مطابق، ٹیکسی ڈرائیور، سواریاں بٹھانے کی بجائے ٹیکسی کو، منشیات کی نقل و حمل میں استعمال کرتا تھا۔

ٹیکسی ڈرائیور کی گرفتاری بارسلونا کی سیسیلا گلی میں وقوع پذیر ہوئی۔ جب اس نے اپنی ٹیکسی کو غلط طریقہ سے کھڑا کیا ہوا تھا۔ جس کی وجہ سے ٹریفک میں رکاوٹ پیدا ہو رہی تھی۔ اور اس رکاوٹ کو ختم کروانے کی کوشش سانت ادریا دے بسوس کی مقامی پولیس کے ایک سپاہی نے کی۔ جو کہ چھٹی کے بعد اپنے گھر جا رہا تھا۔

ٹیکسی ڈرائیور نے پولیس کے سادہ کپڑوں میں ملبوث سپاہی کی دخل اندازی کو ناگوار سمجھتے ہوئے، اس سے جھگڑنا شروع کردیا۔ اسی اثناء میں سپاہی کو شک گذرا کہ، ٹیکسی ڈرائیور منشیات کی خرید وفروخت سے منسلک ہے۔ جس پر اس نے کتلان پولیس کو طلب کر لیا اور ٹیکسی ڈرائیور کو فرار ہونے سے روک دیا۔ جس کے نتیجہ میں ٹیکسی ڈرائیور نے پولیس سپاہی پر حملہ کر کے اسے معمولی زخمی کر دیا۔

کتلان پولیس نے موقع پر پہنچ کر ٹیکسی کی تلاشی کے دوران کوکین کے 8 چھوٹے پیکٹ برامد کرنے کے ساتھ، مختلف کرنسی نوٹ اپنے قبضے میں لے لئے۔ ٹیکسی ڈرائیور کو انسانی صحت کےخلاف اقدامات کرنے کے جرم میں گرفتار کر لیا گیا۔ ٹیکسی کونسل کے نمائندہ سعد مختار تارڑ نے اس واقعہ کو افسوس ناک قرار دیا ہے۔

اور ای ایم ٹی سے مطالبہ کیا ہےکہ وہ ٹیکسی سیکٹر سے گندے انڈوں کو نکالنے کیلئے سخت اقدامات کرے اور جس ڈرائیور نے کسی بھی جرم میں جیل کاٹی ہو، خواہ وہ میڈریڈ کی ہو، ان کا پرانا ریکارڈ طلب کر کے، ان کے خلاف اقدامات کئے جائیں۔ تاکہ ٹیکسی سیکٹر مزید بدنامی سے بچ سکے۔

اس سے قبل اسی اندیشہ کے پیش نظر الیتے ایسوسی ایشن، ٹیکسی سیکٹر میں داخلہ کے ہر خواہشمند سے پولیس کریکٹر سرٹیفیکٹ طلب کرنے کا تحریری مطالبہ کر چکی ہے۔ اور اب ممکنہ طور پر ٹیکسی کونسل کے کسی بھی ممبر کی جانب سے، پہلے سے موجود ٹیکسی ڈرائیوروں سے جیل کاٹنے کا سرٹیفیکیٹ یا پولیس کریکٹر سرٹیفیکٹ طلب کئےجانے کی درخواست دی جاسکتی ہے۔