شیخ الا سلام ڈاکٹر محمد طاہر القادری اس صدی کے مجدد ہیں، شیخ ابو آدم احمد الشیرازی

Sheikh Abu Adam, Ahmed Al Shirazi

Sheikh Abu Adam, Ahmed Al Shirazi

ڈبلین آئرلینڈ (فرخ وسیم بٹ) شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی 65 ویں سالگرہ کے موقع پر اللہ تعالی کی بارگہ میں اظہار تشکر تجدید عہد اور شیخ الا سلام ڈاکٹر محمد طاہر القادری کی صحت، سلامتی اور دراز عمر اور آپکی عالمی وسطح پر قیام امن اور فروغ محبت و روداری کیلئے کی جانے والی کاوشوں کو خراج تحسین پیش کرنے کیلئے تحریک منہاج القرآن ( آئرلینڈ) کے زیر اہتمام ایک سمینار کا اہتمام کیا گیا۔

جس میں ملک بھر سے سیاسی و غیر سیاسی اور مختلف تنظیمات کے قائدین اور تحریک منہاج القرآن ( آئرلینڈ) عہدیداران کے علاوہ کارکنان اور کمیونٹی نے بھرپور شرکت کی۔ تقریب کا آغاز حافظ محمد جنید بغدادی نے تلاوت قرآن پاک سے کیا نعت رسول کی سعادت تحریک منہاج القرآن ( آئرلینڈ) کے جنرل سیکرٹری رضوان احمد طور نے حاصل کی اور نقابت کے فرائض وسیم بٹ نے ادا کیے۔

وسیم بٹ نے اسقبالیہ کلمات ادا کرتے ہوئے کہا کہ تحریک منہاج القرآن شیخ الاسلام کی یوم پیدائش پر ان کی خدمات کو خراج تحسین پیش کرنے کیلئے نئی بنیاد ڈالی اور نئی رسم قائم کی اس لیے آج تک ہم یہی دیکھتے آ رہے ہیں کہ کسی شخصیت کی خدمات کا تذکرہ اس کی وفات کے بعد کیا جاتا ہے جو کہ المیہ ہے تحریک منہاج القرآن نے شیخ الا سلام کی حیات کے اندر ہی اس رسم کو جاری کر کے یہ پیغام دیا ہے کہ ایسی شخصیات کی خدمات کا اعتراف ان کی حیات ہی میں کیا جائے کیونکہ یہی لوگ تاریخ بنانے والے ہیں اور تاریخ ایسے ہی لوگوں کو سلامی پیش کرتے ہیں۔

تقریب سے پی ٹی آئی آئرلینڈ کے صدر چوہدری عمران خورشید تحریک منہاج القرآن آئرلینڈ کے پیر غلام دستگیر آئرشن کونسلر Gino Kenny نے خطاب کیا ۔ مقررین کا کہنا تھا کہ شیخ الاسلام ایک ہمہ جہت شخصیت کے مالک ہیں آپ مختلف میدانوں میں اس مقام و مرتبہ پر فائز ہیں ان کی ہم قامت شخصیت موجودہ دور میں نظر نہیں آئی ، پی ٹی آئی کے صدر چوہدری عمران خورشید نے کہا کہ منہاج القرآن آئرلینڈ نے شیخ السلام کو یوم پیدائش پر تمام پارٹی کو ایک پلیٹ فارم پر اگٹھا کر کے ایک مثال قائم کی ہے جس پر ان کو مبارباد پیش کرتا ہوں جبکہ Gino Kenny نے اپنی سیاسی پارٹی پولیسی سے بھی حاضرین کو اگاہ کیا۔

اس سمینار کے مہمان خصوصی منہاج القرآن برطانیہ کے مرکزی رہنما پاکستان عوامی تحریک (برطانیہ) کے کوارڈینیٹر اور N.E.C برطانیہ کے سابق صدر الشیخ علامہ حافظ ابو آدم احمد البشیرازی نے خصوصی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بلا شبہ ہم شیخ الا سلام کو اس صدی کا مجدد مانتے ہیں اور اس صدی کے مجد ہیں اپنے لیڈر کی تعریف کرتے ہوئے فرمایا کہ لیڈر میں صداقت، عدالت، شجاعت وسعت نظر اور تاثیر کلام ہونا چاہیے۔ پھر لیڈر متحرک ، جان پرسوز اور کردار اعلی ہونا چاہیے۔ جو یہ ساری خصوصیات شیخ الاسلام کی شخصیات میں نظر آتی ہیں۔

اللہ تعالی کا ہمارے اوپر بہت بڑا کرم ہے کہ جس نے شیخ الا سلام جیسی شخصیات کو اس دور میں ہمارے درمیان بھیجی اگرجہ دور حاضر میں عالم اسلام کی کئی شخصیات خدمت دین کا فریضہ سرانجام دے رہی ہیں لیکن ان کی خدمات کا جائزہ لیا جائے توشیخ الا سلام کی ہمہ جہت شخصیت سرفہرست نظر آتی ہے اس لیے بجا طور پر کہا جا ستا ہے کہ موجودہ دور کے شیخ الا سلام ڈاکٹر طاہر القادری ہیں۔

اس تقریب کے آخر میں شیخ الا سلام کی سالگرہ کا کیک بھی کاٹا گیا اور شیخ الا سلام کی صیحت کیلئے دعا بھی کی گئی ۔ اس تقریب میں جن شخصیات نے شرکت کی ان میں سید سجاد شاہ، وارث علی، محمد نواز لانگ فورڈ محمد ریاض ، محمد رمضان ، آئرش کونسلر (روتھ نولین) پی ٹی آئی کے جنرل سیکرٹری مصید حاصل، مدثر علی پی ٹی آئی کے میڈیا کوارڈینیٹر چوہدری عارف، اور دیگر احباب شامل تھے۔

اس سیمنار کے انتظامات میں جن احباب نے تعاون کیا اور جن کی کاوشوں سے سیمنار کامیاب ہوا ان میں تحریک منہاج القرآن کے پیر غلام دستگیر ، رضوان احمد، محمد آصف، فیضاض احمد ، حافظ محمد جنید بغدادی ، محمد اشفاق ، سید ذیشان ، محمد سرفراز، مرزا رضوان، عثمان حسنین شاہ، ملک افتخار، محمد ذوہیب بٹ قادری، پی ٹی آئی کے چوہدری عارف اور مصید ، شامل تھے۔