خودکش بم بار حسینا مشہور ہونے والی حسنہ آیت بوالحسن نے خودکشی نہیں کی : فراسیسی حکام

Hasna

Hasna

پیرس ( اے کے راؤ ) فرانسیسی حکام نے وضاحت کی ہے کہ سینڈیانی اپریش میں خودکش بم بار حسینا مشہور ہونے والی حسنہ آیت بوالحسن نے خودکشی نہیں کی۔ فراسیسی حکام۔ 13 نومبر کی رات پیرس میں ہوئی دہشت گردی کے منصوبہ ساز مراکشی نژاد بیلجیم کے رہاشی شدت پسند عبدالحمید اباعود کی گرفطاری کے لیے کئے گئے اپریش میں منصوبہ ساز کی 26 سالہ کزن حسنہ آیت بوالحسن کی بھی لاش ملی تھی۔

جس نے پولیس کے چھاپے اور دوطرفہ فائرنگ میں کھڑکی میں سے ہیلپ ہیلپ اور میں اس کی دوست نہیں کی آوازیں بھی دی تھیں اور بھر ایک دھماکہ ہوا ، تفتیش کروں کا غالب امکان تھا کہ حسنہ آیت بوالحسن نے خود کو دھماکے سے اڑالیا تھا۔ تازہ ترین اطلاع کے مطابق تفتیش کاروں کا کہنا ہے اسی مقام سے تیسری لاش کے ملنے سے جو کہ مبینہ طور پر اباعود کی ہے اس نے آخری خودکش دھماکہ اپنے لیے کیا جس کی لپیٹ میں حسنہ آیت بوالحسن بھی آئی ۔