برمنگھم کی جیل میں حالات قابو میں، پولیس نے کنٹرول دوبارہ واپس حاصل کر لیا

Jail Riots

Jail Riots

برمنگھم (تنویر کھٹانہ) برمنگھم میں موجود ہر میجیسٹی پرزن برمنگھم میں بارہ گھنٹے کے بعد جیل عملہ اور رائٹ پولیس نے کنٹرول دوبارہ واپس حاصل کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق برطانیہ کی سب سے بڑی جیل میں قید تقریباً چھ سو قیدیوں کی جانب سے نظام جیل کو متاثر کرنے کی کوشش کی گئ اور وہ اس میں کسی حد تک کامیاب بھی رہے۔

قیدیوں نے جیل میں سیڑھیوں اور دفتری ریکارڈ کو آگ لگا دی اور سیکورٹی بیرئیر کو بھی شدید نقصان پہنچایا۔ چودہ سو پچاس قیدیوں کی گنجائش رکھنے والی اس جیل میں ایسے حالات پر قابو پانے والی پولیس کو دو بجے دوپہر کے قریب بھیجا گیا۔

اس تمام جلاؤ گھیراو میں تین قیدی شدید زخمی بھی ہوئے تاہم جیل کا عملہ اس میں محفوظ رہا اور کسی کے بھی زخمی ہونے کی اطلاعات نہیں ہیں۔ جیل کی دیواروں اور دیگر سہولیات کو بہت زیادہ نقصان پہنچایا گیا ہے۔

بارہ گھنٹے گزرنے کے بعد اب جیل کے عملے نے کنٹرول دوبارہ حاصل کر لیا ہے صورتحال اس وقت خراب ہوئی جب جیل کے افسر سے چابیاں چھین لی گئیں اور جیل کے چار سیکشن پر قیدیوں نے قبضہ کر لیا جس میں ایسی صورتحال پر قابو پانے کے لیے سیکشن والا حصہ بھی شامل ہے۔

سپیشل رائٹ پولیس اور جیل کے عملہ نے ڈاگ سکواڈ کی مدد سے حالات پر قابو پا لیا ہے۔ وزارت جیل خانہ جات کی جانب سے مکمل تحقیقات کا یقین دلایا گیا ہے اور ذمہ داران کو کڑی سے کڑی سزا دینے کا وعدہ کیا گیا ہے۔