کاتالان صوبے کے صدر اپنے سپین سے آزادی کے مطالبے سے دستبردار نہیں ہوتے تو ان سے کسی قسم کے مذاکرات نہیں ہو سکتے۔ سورایا سانز

Soraya Saenz

Soraya Saenz

پیرس (زاہد مصطفی اعوان) کاتالان صوبے کے صدر اپنے سپین سے آزادی کے مطالبے سے دستبردار نہیں ہوتے تو ان سے کسی قسم کے مذاکرات نہیں ہو سکتے۔ اس بات کا اعلان سپین کی نائب وزیراعظم سورایا سانز نے کیا۔

انہوں نے کہا کہ سپین کے دستور کے مطابق کاتالان وزیراعلیٰ کارلوس پوجیمونت سمیت کوئی بھی شخص غیر آئینی مطالبہ کریگا تو اس سے کسی صورت مذاکرات نہیں ہو سکتے ہیں۔انہوں نے کارلوس پوجیمونت کی تقریر کو’’ بوکھلاہٹ کا خطاب‘‘ قرار دیدیا اورکہا کہ انہیں اندازہ ہی نہیں کہ وہ کہنا کیا چاہ رہے ہیں ۔خطاب سے اندازہ ہی نہیں ہورہا تھا کہ سپین کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں یا جانا چاہتے ہیں ۔سورایا سانز نے مزید کہا کہ میڈرڈ حکومت کاتالونیہ کی آزادی کیلئے ہونیوالے غیر آئینی ریفرنڈم کو تسلیم نہیں کرتی ا ور اس ریفرنڈم کو ملکی آئینی عدالت بھی غیر قانونی قراردے چکی ہے۔