ملک ترقی خوشحالی کے لیے انتِابات میں بھرپور حصہ لینا ہو گا۔ پی پی پی یورپ کے صدر ڈاکٹر ارشاد علی کمبوہ

Dr. Irshad Ali Kamboh

Dr. Irshad Ali Kamboh

پیرس (زاہد مصطفی اعوان سے) پاکستان پیپلزپارٹی یورپ کے صدر ڈاکٹر ارشاد علی کمبوہ نے کہا کہ آج میں فرانس کے شہر پیرس سے بلخصوص یورپ اور بالعموم دنیا بھر میں بسنے والے پاکستانی بہن بھائیوں، بزرگوں اور نوجوانوں سے دل کی بات کرنا چاہتا ہوں اور وہ یہ ہے کہ ہم سب اپنے پیارے پاکستان کی کس طرح مدد اور خدمت کریں کہ وہ ترقی کی راہ پہ گامزن ہو سکے۔

آپ نے دیکھ لیا کہ اسلام کا نعرہ لگا کر شدت پسندوں کی حوصلہ افزائی کی گئی، پھر روشن خیالی کے نعرے نے ملک میں فحاشی اور افراتفری کو فروغ دیا اور اب نئے پاکستان کا لولی پاپ نما نعرہ لگ رہا ھے کہ جسکی سربراہی اب لوٹے اور مفاد پرست کر رہے ھیں۔وہ بھائی کی وفات پر تعزیت کےلئے یورپ بھر آئے ہوئے پارٹی راہنماوں سیاسی سماجی شِضیات سے بات کررہئے تھے انہوں نے کہا آپ سے میرا سیدھا سادہ سوال ھے کہ کیا ہم اپنے بچوں کے مستقبل اور ملک کی بھاگ دوڑ ان لوٹوں اور طالبان کے حمائتییوں کے ہاتھ میں دے سکتے ھیں؟ ظاہر ھے آپکا جواب نفی میں ہو گا تو پھر ہمیں ایک نوجوان قیادت بلاول بھٹو کو آگے لانا ہوگا کیوںکہ وہ شہید ذوالفقار علی بھٹو اور شہید محترمہ بینظیر کے ادھورے مشن کو پورا کرنے کیلئیے جان ہتھیلی پہ رکھ کر میدان میں آچُکے ھیں۔ شہید بی بی کو ہر خاص و عام نے لیڈر مانا اور اب اسی شہید لیڈر کا مشن بلا ول بھٹو نے پورا کرنے کا عزم کیا ھے۔

بلاول بھٹو نے ملک سے غربت، نفرت، شدت پسندی اور محرومی کا خاتمہ کرنا ھے۔ بلاول بھٹو پڑھا لکھا نوجوان ھے جو معیشت، غریب کی زندگی اور امن میں بہتری لا سکتا ھے۔ وہ شہیدوں اور نظریات کا علمبردار ھے اور پیپلزپارٹی کی قیادت نے ھمیشہ غریب، کسان اور پاکستان کی نہ صرف بات کی بلکہ بینظیر اِنکم سپورٹ، ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ بلکہ بارہ فیصد شئیرز، این ایف سی ایوارڈ، اٹھارویں ترمیم، مالاکنڈ سے دھشدگردوں کا خاتمہ، امراض دل کے ہسپتال، چھوٹے ڈیم، گلگت بلتستان کو صوبائی اختیارات، پٹھان بھائیوں کو صوبے کی پہچان، بلوچستان میں امن اور پیکج کے زریعے معاشی بہتری، کشمیر کی آزادی، اداروں کی مظبوطی، عدلیہ اور میڈیا کی آزادی، اقلیتوں اور خواتین کے حقوق، صوبائی خود مختاری، صدارتی اختیارات کی پارلیمان کو منتقلی، چائنا سے گوادر اور سی پیک جیسے تاریخی پروجیکٹس کے علاوہ بیشمار عوامی اور تاریخی کارنامے سرانجام دئیے ھیں۔یاد رکھئیے کہ جسطرح ہماری پاک فوج سرحدوں کی محافظ ھے اور ہمارا فوجی جوان شہادت کے جذبے سے سرشار ہوتا ھے تو بلکل اسی طرح پیپلزپارٹی بھی آپکی نظریاتی محافظ ھے اور ہماری لیڈرشپ سے لیکر کارکن تک شہادت کیلئیے تیار رہتے ھیں۔ جمہوریت کا دوسرا نام پیپلزپارٹی ھے۔ قائداعظم کے پاکستان کو اسکا کھویا ہوا پاکستان واپس دلانا ہو گا۔