‎سی پیک منصوبہ موجودہ حکومت کا انقلابی اقدام ہے۔ نبیل جاوید قریشی

Nabeel Javed Qureshi

Nabeel Javed Qureshi

‎مانچسٹر (نوید چوھان) پاکستان میں سازگار کاروباری حالات موجودہ حکومت کی عوام دوست پالیسیوں سے ہی ممکن ہو پائے ہیں، امن و امان کی صورتحال سے بیرون ملک بسنے والے پاکستانی بزنس مین بھی پاکستان میں سرمایہ کاری کر رہے ہیں۔ ریئل اسٹیٹ کا بزنس اور معدنیات کا بزنس پاکستان میں عروج پر ہے جس میں سرمایہ کاری کر کے پاکستانی معشیت کو مزید بہتر بنایا جا سکتا ہے۔

کاروبار ہو یا روزمرہ زندگی خدمت پر یقین رکھتا ہوں اور جن حالات سے پاکستان اس وقت گزر رہا ہے ان حالات میں پاکستان میں سرمایہ کاری نہ صرف حب الوطنی کا ثبوت ہے بلکہ ملک پاکستان کی ایک عظیم خدمت ہے۔

ان خیالات کا اظہار نوجوان بزنس مین نبیل جاوید قریشی نے میڈیانمائندگان سے ایک خصوصی نشست میں کیا اس گفتگو میں کمیونٹی کے مسائل اور ان کے حل پر گفتگو کی گئی۔نبیل جاوید قریشی نے کہا کہ کمیونٹی میں اس وقت اتفاق کی اشد ضرورت ہے دیگر کمیونٹی کی طرح پاکستانیوں اور کشمیری کمیونٹی کو بھی چاہیے کہ وہ آپس میں اتفاق ،بھائی چارے کی فضا قائم کرتے ہوئے نہ صرف اس ملک بلکہ اپنے وطن کی ترقی اور خوشحالی کا بھی باعث بنیں ۔ ہمارے پاس صلاحیت بھی ہے اور وسائل بھی مگرافسوس ہے کہ ہم اس کا صیح استعمال نہیں کرتے اور بہت وقت ضائع کر تےہ یں لیکن اب وقت آگیا ہے کہ ہر شخص پاکستان کی تعمیر و ترقی میں اپنا حصہ ڈالے، تمام کمیونٹی ،آرگنائزیشن اور کمیونٹی لیڈروں کو چاہیے کہ وہ اوورسیز کمیونٹی کو ایک پلیٹ فارم پر اکٹھا کر کے ایک مثبت اور جامع پلان دے کر اوورسیز کی ترقی اور خوشحالی کا باعث بنیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی عالمی منڈیوں تک رسائی کے لیے اوورسیز میں بسنے والے پاکستانی نژاد کاروباری حضرات سے رائے کے لیے ایک ایڈوائزری بورڈ تشکیل دینا چاہیے جو کہ کاروباری معاملات کے لیے سفارشات مرتب کرے اور پاکستانی مصنوعات کی یورپ اور دیگر عالمی منڈیوں تک رسائی بھی اسی صورت میں ممکن ہو گی۔

ان کا کہنا تھا کہ سی پیک منصوبہ پورے خطے کے لیے گیم چینجر ہے اس لیے نہ صرف دوسرے ممالک بلکہ اوورسیز میں بسنے والے پاکستانی بزنس مین بھی اس منصوبے کے ثمرات سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔ کاروبار تجربہ سے ہی ہوتے ہیں لیکن اگر محنت، سچی لگن اور نیک نیتی سے کام کیا جائے تو کامیابی آپ کے قدم چومے گی۔