گلگت بلتستان کو بنیادی انسانی حقوق سے محروم رکھا گیا اور وسائل پر ہاتھ صاف کئے گئے عوام جاگ چکی ہے۔ سید برکات الخسن

Syed Barkat al-Hasan

Syed Barkat al-Hasan

‎یارکشائر (تیمور لون) گلگت بلتستان کے محنت کش اپنے حقوق کے لئے اک تاریخی جدوجہد کر رہے ہیں۔ ریاست جموں کشمیر کے باقی حصوں کے لوگ اس عظیم جدوجہد کے ساتھ کھڑے ہیں۔ پاکستان کے بددیانت حکمرانوں نے برسوں سے گلگت کے بنیادی انسانی حقوق سے محروم رکھا۔ اور اس سر زمیں کے بے پناہ قدرتی وساہل کو لوٹا ہئے۔ لوگوں کا بدترین معاشی استحصال کیا۔ اب غلامی کی یہ زنجیریں ذیادہ دیر نہیں ٹھہر پائیں گی۔ محنت کش جاگ چکے ہیں ۔ ان کی عظیم جدوجہد اسلام آباد کے درباروں کو ہلا رہی ہیے۔

‎ان خیالات کا اظہار یو کے پی این برطانیہ برانچ کے راہنما اور یوکشائر یونٹ کےسکٹری نشرواشات سید برکات الخسن نے لیڈز میں اک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان اور ہندوستان اب زیادہ دیر جموں کشمیر پر اپنا ناجائز قبضہ برقرار نہیں رکھ پائیں گے۔

ریاست کے لوگوں کو بنیادی انسانی حقوق سے محروم کرکے اس ریاست کے سارے وسائل لوٹنے والے پاکستان اور ہندوستان کے بددیانت حکمران اور ان افواج کو ریاست جموں کشمیر چھوڑنا ہوگی ۔1947 سے ریاست جموں کشیمر کو تقسیم کرکے جنگ کامیدان بنایا ہوا ہئے بے گناہ کشمیریوں ہر روز سرحد پر مارے جاتے ہیں۔

اب یہ کھیل مزید نہیں چلے گا ریاست جموں کشیمر کی وحدت بحال ہو کر رہے گی۔ ‎انھوں نے مزید کہا کہ یو کے پی این پی گلگت بلتستان کے منحت کشوں کے ساتھ کھڑی ہئے۔ ہم ہر محاذ پر ان کی اس جدوجہد کو آگے بڑھانے میں اپنا حصہ ڈالیں گے۔