ہم سانحہ گوجرہ کے شرمناک واقعہ کو کھبی فراموش نہی ہونے دیں گے، پاسٹر ولئیم پیغانی

Pastor William

Pastor William

ہالینڈ (واٹسن سلیم گل) ہر سال کی طرح اس سال بھی گوجرہ کے شرمناک واقعہ کی یاد میں ہالینڈ میں 5 اگست 2017 کو ایک یادگار دُعایا تقریب منعقد ہورہی ہے۔ تقریب میں ہالینڈ سے تمام مکاتب فکر سے لوگ شرکت کر رہے ہیں۔

علاقے کے مئیر بھی خصوصی طور پر شریک ہورہے ہیں۔ اس تقریب میں گوجرہ کے واقعہ میں شہید ہو جانے والے ایک ہی خاندان کے نو افراد کو خراج تحسین پیش کیا جائے گا اور پاکستان میں رہنے والے دیگر مسیحیوں کے لئے دُعائے خیر کی جائے گی۔

یاد رہے کہ 1 اگست 2009 کو صوبہ پنجاب کے علاقے گوجرہ میں ایک مسیحی بستی کو جلا کر خاک کر دیا گیا تھا۔ ایک شخص پر الزام تھا کہ اس نے پیغمبر اسلام کی توہین کی ہے اسے پولیس کے حوالے کئے جانے کے باوجود بھی اردگرد کی مساجد سے گوجرہ کے مسیحیوں کے خلاف اعلانات ہوتے رہے ،مسلمانوں کے ایک ہجوم نے جن کی تعداد بیس ہزار کے قریب تھے اس علاقے کو 16 گھنٹے تک اپنے حصار میں رکھا پولیس کچھ نہ کر سکی اور پھر اس مشتعل ہجوم نے پوری بستی کو جلا کر خاک کر دیا۔

مسیحیوں نے بھاگ کر جانیں بچایئں جو مگر ایک خاندان جن کا ایک بزرگ گولی لگنے سے جاں بحق ہو گیا تھا اس خاندان کے لوگ اپنے پیارے کی لاش کو نہی نکال سکے اور ہجوم نے ان کو بھی زندہ جلا دیا تھا۔

پاسٹر ولئیم پیغانی کا تعلق بھی گوجرہ سے ہے انہوں نے اور ان کے خاندان نے ان حالات کا برائے راست سامنا کیا ہے اور اس واقعہ کے چشم دید گواہ ہیں۔ بعد بھی پاسٹر ولئیم نے بہت سی مشکلات دیکھیں اور پھر پاکستان چھوڑنے کا فیصلہ کیا۔ چند سال تھائ لینڈ میں پناہ گزین کی حثیت سے رہے اور پھر نیدرلینڈ کی حکومت کی بدولت آج وہ نیدر لینڈ میں رہتے ہیں۔ اور ہر سال اس خوفناک سانحے کی یاد میں تقریب منقعد کرتے ہیں۔

پروگرام کی تفصیل رپورٹ میں شامل پوسٹر پر موجود ہے اور مضید تفصیل کے لئے پوسٹر پر موجود فون نمبرز پر رابطہ کر سکتے ہیں۔

Poster

Poster