نارویجن انسانی حقوق کی تنظیم کا امروز پرویز اور پروینہ آھنگر کو ایوارڈ کے لیے منتخب کرنا قابل ستائش ہے، علی رضا سید

Ali Raza Syed

Ali Raza Syed

برسلز (پ۔ر) چیئرمین کشمیر کونسل یورپ (ای یو) علی رضا سید نے کہاہے کہ ناروے کی انسانی حقوق کی ایک معروف تنظیم ’’رفتو فاونڈیشن‘‘ کی طرف سے انسانی حقوق کے دو نامور کشمیری علمبرداروں امروز پرویز اور پروینہ آھنگر کو ایوارڈ دینے کا اعلان قابل ستائش ہے۔

واضح رہے کہ رفتو فاونڈیشن ناروے نے جمعرات کے روز ان دونوں کشمیری شخصیات کو مقبوضہ وادی میں ان کی انسانی حقوق کے لیے طویل جدوجہد کی بنا پر اپنے سالانہ ایوارڈ برائے 2017 کے لیے منتخب کیا ہے۔

علی رضا سید نے اپنے بیان میں رفتو فاونڈیشن کے اس اقدام کو سراہتے ہوئے کہاہے کہ اس یورپی ایوارڈ کا اعلان مقبوضہ کشمیرکے لوگوں کے حقوق کو تسلیم کرنے کے مترادف ہے اور یہ اس بات کی تصدیق بھی ہے کہ وادی کشمیرمیں بھارتی افواج کشمیریوں پر بے پناہ ظلم و ستم ڈھارہی ہیں۔

انھوں نے کہاکہ پرویز امروز اور پروینہ آھنگر جیسے انسانی حقوق کے کارکنوں کی جدوجہد انتہائی قابل قدر ہے جو بہت زیادہ مشکلات کے باوجود تشدد اور انسانی حقوق کی پامالی کے خلاف اپنی آواز بلند کررہے ہیں اور ان کی جدوجہد کا مقصد کشمیرکے مظلوم انسانوں کو ان کے حقوق دلانا اور ان کے جان و مال کو تحفظ فراھم کرنا ہے۔

انسانی حقوق کے ان عظیم علمبرداروں نے ہمیشہ امن اور آشتی کا درس دیاہے اور کشمیر کے لوگوں کے انسانی حقوق کے لیے کوشش کی ہے۔ ان کو ایوارڈ دینے کا اعلان کرنا ان کے اس نوبل کام کی وجہ سے ہے کیونکہ وہ ان لوگوں پر تشدد کے خلاف ہیں جو آزادی کے لیے قانونی اور پرامن جدوجہد کررہے ہیں۔

انھوں نے ہمیشہ ریاستی جبر اور ریاستی دہشت گردی کے خلاف آواز بلند کی ہے اور ان کے لیے ایوارڈ اس بات کا ثبوت ہے کہ مہذب دنیا انسانیت کے خلاف جرائم کو ہرگز قبول نہیں کرتی۔ تشدد خاص طورپر عورتوں اور بچوں پر ظلم کی اب مہذب دنیا میں کوئی جگہ نہیں۔

چیئرمین کشمیرکونسل ای یو نے مزید کہاکہ رفتو فاونڈیشن ایوارڈ صرف ان دو کشمیری کے لیے اعزاز ہی نہیں بلکہ یہ ایوارڈ پوری کشمیری قوم کے لیے ہے جو بھارتی ظلم کا شکار ہے اور اپنے حقوق کے لیے کوشاں ہے۔

انھوں نے امید ظاہر کی کہ اس نارویجن ایوارڈ سے دنیا میں مسئلہ کشمیر کے بارے میں مزید آگاہی پیدا ہوگی اور وادی کے مظوم کشمیریوں کو مزید حوصلہ ملے گا۔

چیئرمین کشمیرکونسل ای یو نے ایمنسٹی انٹرنیشنل کی حالیہ رپورٹ کا بھی حوالہ دیا جس میں کشمیریوں پر سنگین بھارتی مظالم کی تصدیق کی گئ ہے۔ انھوں نے کہاکہ مقبوضہ کشمیرکے زمینی حقائق سے کوئی انکار نہیں کرسکتا۔

علی رضا سید نے عالمی براردی اور خصوصاً اقوام متحدہ اور یورپی یونین سے مطالبہ کیا کہ وہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارت کو انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں سے روکے اور مسئلہ کشمیرکے پرامن حل کی راہ ہموار کرے۔