پاکستان کا پہلا اور بڑا میلہ پیرس کے مضافاتی علاقے میں پاکستان کی آزادی کی 70 سالہ تکمیل کے حوالے سے منعقد کیا گیا

Pakistani Mela

Pakistani Mela

پیرس (زاہد مصطفی اعوان سے) پاکستان کا پہلا اور بڑا میلہ پیرس کے مضافاتی علاقے میں پاکستان کی آزادی کی 70 سالہ تکمیل کے حوالے سے منعقد کیا گیا جس میں پاکستان کی ثقافت، دستکاری مصنوعات، فیشن، موسیقی اور کھانوں کی نمائش کی گئی۔

اس میلے کا افتتاح سفیر پاکستان معین الحق، فرانسیسی پارلیمنٹ کے رکن فرانسوا پپونی اور سارسل ٹاؤن کے میئر نیکولس مکونی نے مشترکہ طور پر کیا۔ اس میلے میں ہزاروں کی تعداد میں مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے لوگوں، سفارتکاروں، فرانسیسی سرکاری عہدے داران، فرانسیسی شہریوں، صحافیوں اور پاکستانیوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

اس میلے کا آغاز پاکستانی اور فرانسیسی قومی ترانوں سے کیا گیا۔ اس موقع پر سفیر پاکستان نے پاکستان کی آزادی کے 70 سال مکمل ہونے پر پاکستانی کمیونٹی کو مبارک باد پیش کی۔

سفیر پاکستان نے کہا کہ اس میلے کے انعقاد کا مقصد پاکستانی کمیونٹی اور فرانسیسی دوستوں میں پاکستان کی آزادی کی 70 سالہ تکمیل کے جشن کو پاکستانی ثقافت اور موسیقی، پاکستان کے معروف ورثہ اور خوبصورت مناظر کو سیاحتی اعتبار سے متعارف کرانا تھا۔

سفیر پاکستان نے کہا کہ اس میلے کا مقصد پاکستانی کمیونٹی کو ایک پلیٹ فارم پر اکٹھا کرنا اور ان کا ملک سے رشتہ مزید مضبوط کرنااور ان کو تخلیقی و فنی صلاحیتوں کا عملی مظاہرہ کرنے کا موقع فراہم کرنا ہے۔

فرانسیسی قومی اسمبلی کے رکن فرانسوا پپونی اور سارسل ٹاؤن کے میئر نکولس مکونی نے اس یادگار موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی قوم ایک پرامن، جفاکش اور دوستی پسند قوم ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس پروگرام کی وجہ سے نہ صرف فرانسیسی عوام کو ایک چھوٹا پاکستان دیکھنے کا موقع ملا بلکہ اس اس پروگرام کی وجہ سے دونوں ممالک کے درمیان باہمی تعلقات میں مزید اضافہ بھی ہواہے۔

سفیر پاکستان نے فرانسیسی مہمانوں کو یادگاری شیلڈز بھی پیش کیں۔ یہ شیلڈز انہیں پاکستانی کمیونٹی کے ساتھ فلاح و بہبود کے اعتراف میں دی گئیں۔

اس میلے میں پاکستانی کمیونٹی کی طرف سے ثقافتی اور فیشن شو کا بھی انعقاد کیا گیا۔ تقریب میں لوک گیت اور پاکستان کے مختلف علاقائی لباسوں کی شاندار نمائش نے خوب داد وصول کی۔

[17/09, 17:36] Zahid MustafaAwan: اس میلے میں لگائے گئے سٹالوں کے نام پاکستانی علاقوں کے ناموں کی مناسبت سے رکھے گئے تھے جن میں مہمانوں کیلئے خاص پاکستانی کھانوں کی مختلف اقسام رکھی گئی تھیں جن سے مہمان بہت لطف اندوز ہوئے۔

اس میلے میں میجک شو، قرعہ اندازی، مہندی، تصویری نمائش، بچوں کے کھیل اور پتنگ بازی کے مقابلوں کا بھی اہتمام کیا گیا تھا۔

پاکستان کے بین الاقوامی شہرت یافتہ گلوکار جواد احمد کو خاص طور پر پاکستان سے اس میلے میں بلایا گیا تھا انہوں نے دلوں کو گرما دینے والے گیتوں اور صوفی موسیقی سے اس میلے کی شام کو خوشنما بنا دیا۔ اس میلہ کو فرانس میں ہر سال منعقد کرنے کے عہد کے ساتھ منایا گیا۔