دی سینٹریم مال” بحریہ انکلیو اسلام آباد کی پیرس میں پری لانچنگ تقریب، 70 سالہ جشن آزادی پاکستان کا کیک بھی کاٹا گیا

پیرس (اے کے راؤ سے) مرگلاہلز کی خوبصورت وادی اور بحریہ انکلیو اسلام آباد کے سنگم میں ایگل گیٹ کا شاندار منصوبہ “دی سینٹریم مال” کمرشل اور رہائشی اپارٹمنٹس کے شاندار منصوبے کی یورپ میں پری لانچنگ تقریب پیرس کے شاہ نواز ہال میں کر دی گئی۔13 اگست بروز اتوار کی شام پیرس میں ہوئی اس تقریب کا آغاز قاری محمدصدیق کی تلاوت اور حافظ محمد معزم کی تلاوت سے ہوا۔ جبکہ تقریب کی نظامت کے فرائض پاکستان تحریک انصاف کے روح رواں یاسر قدیر نے ادا کیے۔ اس تقریب کے لیے پیرس کی بزنس کمیونٹی کو دعوت دی گی تھی۔ ایگل گیٹ کے سربراہ میجر یاسر چوھدری نے شرکاء محفل کو پراجیکٹ کے خدو خال بتاتے ہوئے کہا کہ ،”دی سینٹریم مال” مرگلاہلز کی خوبصورت وادی اور بحریہ انکلیو اسلام آباد کے سنگم میں یورپین سٹنڈرڈ کے عین مطابق بنایا جا رہا ہے۔ “دی سینٹوریم مال” گر اونڈ پلس 9 میں ,13m2 سے 145m2 کی شاپس اور ایک 45m2 سے 4 بیڈ روم 227m2 کے لگزری 1143 اپارٹمنٹس ہو نگے۔ میجر یاسر کا یہ بھی بتانا تھا کہ بحریہ انکلیو کا پورا علاقہ وائی فائی فری زون ہوگا ، جس کی مثال دنیا میں نہیں ملتی۔ ان کا یہ کہناتھا تھا پاکستان بھر میں صرف بحریہ انکلیو ہی ایسا علاقہ ہے جس کے مال اور املاک کو آپ کے پیرس کی طرز پر انشورنس کور کرے گی۔ بلڈنگ کی مینٹینس کے لیے یورپ سٹنڈرڈ کے طرز پر ایک معمولی چارج صرف 8 یورو میں پلمبر الیکٹریشن کی سہولت بھی رکھی گئ ہے۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ تعمیری کوالٹی میں نام ہی کافی ہے ، بحریہ سے کون واقف نہیں ایشیاء میں سب زیادہ ایوارڈ بحریہ ہی کے پاس ہیں۔یاسر قدیر نے ایگل گیٹ پراجکیٹ کے منتظمین کا تعارف کروتے ہوئے بتایا کے اس کمپنی میں ٹوٹل 11 ڈائریکٹرز ہیں ، ً فاروق نواز کیانی ، چوھدری محمد فاروق ، منور جٹ ، فہد کیانی ، چوھدری محمد شہباز اور چوھدری محمد اعظم سمیت 7 کا تعلق فرانس سے ہے جن کی سربراہی میجر یاسر چوھدری فرما رہے ہیں۔اوور سیز ڈائریکٹر ایگل گیٹ فاروق نواز کیانی جو کہ حکومت پاکستان کے بورڈ آف انوسٹمنٹ کی جانب سے انوسٹمنٹ کونسلر بھی ہیں نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اوور سیز پاکستانیوں کے لیے “دی سینٹریم مال” میں کی گئی سرمایا کاری بلا شبہ ایک محفوظ سرمایہ کاری ہو گی کیوںکہ اس میں خود اوور سیز پاکستانی حصہ دار ہیں۔صدر منہاج القرآن فرانس چوھدری محمد اعظم جو کہ خود بھی “دی سینٹریم مال” میں اوور سیز ڈائریکٹر ہیں نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے فرمایا پبلک سروس کے لیے کوئی بھی زمہ داری اعزاز کی بات ہوتی ہے مگر منہاج القرآن فرانس کی سربراہی قابل فخر ہے ! آپ یورپ میں ہوں اور آپ کو نسبت قرآن کی ملے اس سے اور بہتر کیا ہو سکتا ہے ،مگر اس پراجیکٹ میں میں زاتی حیثیت میں ہوں اور میں ہی اس کا زمہ دار ہوں ،حصول رزق حلال ہر شخص کی بنیادی ضرورت ہے۔ تمام ڈائریکٹرز کی متفقہ رائے سے فرانس میں “دی سینٹریم مال” بحریہ انکلیو اسلام آباد کی ڈیلر شپ راؤ خلیل احمد اور بابر مغل کو دی گئی۔ اپنی سند حاصل کرنے کے بعد راؤ خلیل احمد نے سامعین کو دعوت دی کہ وہ اس پراجیکٹ کا حصہ بنیں اور اپنی اس دعوت میں کیوں اور کیسے پر کھل کر اظہار خیال کیا۔ تقریب کے اختتام پر حاضرین محفل کے لیے کھانے کا اہتمام تھا اور پاکستان کے 70ویں جشن آزادی کا کیک سربراہ دی سینٹریم مال” بحریہ انکلیو اسلام آباد میجر یاسر چوھدری نے اپنی ٹیم اور کمیونٹی معززین کے ہمراہ ملی نغموں کی گونج میں کاٹا۔

Ceremony

Ceremony

Ceremony

Ceremony

Ceremony

Ceremony

Ceremony

Ceremony

Ceremony

Ceremony

Ceremony

Ceremony